پاک افغان سرحد پر فائرنگ: میڈیا کے ذریعے معاملہ اٹھانے پر افسوس ہوا، پاکستان

0 253

اسلام آباد: دفتر خارجہ نے سرحد پار فائرنگ کے حالیہ تنازع پر پاکستانی تجویز کا جواب دینے کے بجائے افغانستان کی حکومت کی جانب سے میڈیا کے ذریعے پاکستان پر الزامات کی بوچھاڑ پر افسوس کا اظہار کردیا۔

تفصیلات کے مطابق اتوار اور پیر کی درمیانی شب کو پاک-افغان سرحد پر فائرنگ کے واقعے پر افغان وزیر خارجہ کے بیان پر پاکستان کے دفتر خارجہ نے کہا کہ یہ انتہائی افسوسناک ہے کہ طے شدہ رابطے کو بروئے کار لانے کے بارے میں باہمی معاہدے کے باوجود، افغانستان نے میڈیا پر بیان بازی کے ذریعہ مذکورہ مسئلے کو اٹھایا۔

خیال رہے کہ اتوار کو افغان فورسز نے سرحد پر پوسٹ کی تعمیر روکنے کے لیے فائرنگ کی تھی، جس کے نتیجے میں 5 شہری اور 6 فوجی سمیت 11 پاکستانی زخمی ہوگئے تھے۔

افغان حکومت نے پاکستان پر بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی کا الزام لگایا اور اسے ’قومی سلامتی‘ اور ’واضح خلاف ورزی‘ قرار دیا۔

اس کے جواب میں دفتر خارجہ کے جاری اعلامیے میں کہا گیا کہ وزارت کو اپنا ریکارڈ درست رکھنا چاہئے کہ 27 اور 28 اکتوبر کو افغان فوج نے پاکستانی فوج کی نئی قائم کی گئی فوجی چوکی پر مارٹر گولوں اور بھاری ہتھیاروں سے بلا اشتعال فائرنگ کی جس سے پاک فوج سے 6 جوان زخمی ہوگئے۔

انہوں نے کہا کہ بلااشتعال فائرنگ کے باوجود پاک فوج نے کشیدگی میں مزید اضافے سے بچنے کے لیے انتہائی تحمل کا مظاہرہ کیا۔

تبصرے
Loading...